انجیکشن سے پینٹنگ بنانے والی نرس

 لندن:(ویب ڈسک) کِم جوائے پیشے کے لحاظ سے ایک نرس ہیں لیکن انہیں مصوری اور پینٹنگ کا بھی جنون ہے اور اپنا شوق پورا کرنے کے لئے وہ مختلف سرنجوں میں رنگ بھر کر اس سے خوبصورت پینٹنگز بناتی ہیں۔

کِم جوائے کا کام اب دنیا بھر میں مقبول ہو رہا ہے جہاں لوگوں نے ان کی تخلیقات کو ایک نئے طریقے سے بنانے کو پسند کیا ہے۔

کِم جوائے نے اس عمل کو ’انجیکٹ آرٹ‘ کا نام دیا ہے۔ اس کا خیال ان کے ذہن میں اس وقت آیا جب وہ اپنے ایک مریض کو انجیکشن لگا رہی تھیں۔ 24 سالہ نرس کا تعلق فلپائن کے شہر ولاڈولڈ سے ہے اور ان کا پورا نام کمبرلی جوائے مگبونوا ہے۔ نرس ان کا پیشہ ہے اور پینٹنگ ان


کا جنون اور اب انہوں نے ان دونوں کے درمیان مشترکہ راہ تلاش کرلی ہے۔

Screenshot_20170904-001943

اس کے بعد بار بار کِم جوائے اس پر غور کرتی رہیں اور پھر انہوں نے انجیکشن کے ذریعے پینٹنگ شروع کر دیں جس میں وہ بہت تیزی سے حیرت انگیز تصاویر بنا سکتی ہیں

کِم جوائے ایک وقت میں کئی سرنجوں میں رنگ بھر کر استعمال کرتی ہیں اور انہیں حسین روپ دیتی ہیں۔ ان کی پینٹنگز میں فطرت، حیات کی رنگا رنگی اور سبھی کچھ موجود ہے۔

Related

JOIN THE DISCUSSION